22

صدر پاکستان عارف علوی نے ڈالر مہنگا ہونے کے بعد عوام سے اپیل

صدر پاکستان عارف علوی نے ڈالر مہنگا ہونے کے بعد عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ پاکستانمیں تیار ہونے والی اشیاء کو استعمال کریں اور درآمدی اشیاء سے پرہیز کریں۔تفصیلات کے مطابق روپے کی قدر میں کمی آئی تو ڈالر سمیت تمام غیر ملکی کرنسیاں تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئیں۔ نومبر کے اختتام تک مہنگائی میں دوگنا اضافہ ہو گیا۔ایک ہی ہفتے میں ڈالر کی قیمت میں 5.06 روپے کا اضافہ ہوا۔ ہفتے کے اختتام پر سعودی ریال کی قیمت 37.06 روپے، یورو 158.17 روپے اور برطانوی پاؤنڈ 177.85 روپے کا ہو گیا۔ جبکہ کاروبارہ ہفتے کے اختتام پر ڈالر 139 روپے کی بلند ترین سطح پر بند ہوا۔ اسٹیٹ بینک کی مانیٹری پالیسی کی رپورٹ کے مطابق ملک میں مہنگائی کی شرح میں اضافہ ہوا ہے۔

گیس نرخ بڑھنے سے بھی ملک میں مہنگائی میں اضافہ ہوا۔

سی این جی مہنگی ہونے کی وجہ سے ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں اضافہ ہو گیا جس کا بوجھ عوام کو اُٹھانا پڑا۔سیمنٹ اور سریے کی قیمت بڑھنے سے تعمیری لاگت میں بھی اضافہ ہوا۔دوسری جانب ائیرٹکٹس کی قیمتوں میں اضافہ ہو چکا ہے۔پاکستان سے مشرق وسطیٰ ، برطانیہ ، امریکا اور کینیڈا کے لیے جانے والی پروازوں کے کرایوں میں 10 سے 15 فیصد اضافہ ہوچکا ہے۔قومی ائیرلائن پی آئی اے سمیت تمام نجی و غیر ملکی ہوائی کمپنیاں اپنے کرایوں میں اضافہ کررہی ہیں۔سعودی عرب کے لئے اکانومی کلاس کا کرایہ 65ہزار سے بڑھ کر 70سے 75ہزار جبکہ لندن اکانومی کلاس کاکرایہ ایک لاکھ روپے اورامریکہ ،کینیڈا کا کرایہ پونے 2لاکھ روپے ہو گا۔اس صورتحال کے پیش نظر صدر پاکستانعارف علوی نے عوام سے خصوصی اپیل کر دی۔

انہوں نے سوشل میڈیا پر اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ڈالر مہنگا ہونے کے باعث میں عوام سے اپیل کروں گا کہ وہ پاکستان میں تیار کردہ اشیاء کو استعمال کریں۔انکاکہنا تھا کہ بحران کے اس وقت میں ہمیں ہر آسائش اور درآمدی اشیاء سے پرہیز کرنا ہوگا۔اگر ہم دیکھیں تو ہمیں روز مرہ کے استعمال میں بہت سی اشیاء ایسی ملیں گی جو درآمدی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں